امریکہ نے ایرانی فوجی سربراہ جنرل سلیمانی پر حملہ کر کے قتل کر دیا

عراق کے دارالحکومت بغداد کے ایئر پورٹ پر امریکی راکٹ حملے میں ایران کی القدس فورس کے سربراہ جنرل قاسم سلیمانی سمیت 5 افراد جاں بحق ہو گئے۔

بغداد: امریکی حملہ، کمانڈر ایرانی القدس فورس سمیت 5 جاں بحق
امریکی راکٹ حملے میں جاں بحق ہونے والے ایرانی القدس فورس کے سربراہ جنرل قاسم سلیمانی

امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ بغداد کارگو ٹرمینل کے قریب سڑک پر 2 گاڑیوں کو راکٹ حملوں کا نشانہ بنایا گیا۔

امریکی سفارتخانے پر حملے سے ایران کا کوئی تعلق نہیں، آیت اللّٰه‎ خامنہ ای

جنرل سلیمانی کے بغداد ایئر پورٹ پر اترتے ہی امریکی فوج کی جانب سے راکٹ حملہ کر کے انہیں نشانہ بنایا گیا۔

ایرانی ٹی وی نے بغداد ایئر پورٹ پر امریکی حملے میں جنرل سلیمانی کے شہید ہونے کی تصدیق کی ہے۔

روسی خبر ایجنسی کے مطابق امریکا نے بغداد ایئر پورٹ کے قریب راکٹس سے 2 اہداف کو نشانہ بنایا تھا۔

عراق کی پاپولر موبائلائزیشن فورس نے حملے میں اپنے 5 افراد کی موت کی تصدیق کی ہے اور بتایا ہے کہ راکٹ حملے میں 2 مہمان بھی مارے گئے۔

بغداد: امریکی حملہ، کمانڈر ایرانی القدس فورس سمیت 5 جاں بحق
امریکی راکٹ حملے میں جاں بحق ہونے والے عراق کی پاپولر موبائلائزیشن فورس کے ڈپٹی کمانڈر ابومہدی المہندس

عراق کی پاپولر موبائلائزیشن فورس کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس حملے میں ایران کی القدس فورس کے سربراہ جنرل سلیمانی کے علاوہ عراق کی پاپولر موبائلائزیشن فورس کے ڈپٹی کمانڈر ابومہدی المہندس بھی جاں بحق ہوئے ہیں۔

امریکی سینیٹر لنزے گراہم نے بھی ایرانی جنرل سلیمانی کو نشانہ بنائے جانے کی تصدیق کر دی ہے۔

بغداد: امریکی حملہ، کمانڈر ایرانی القدس فورس سمیت 5 جاں بحق
بغداد: امریکی حملہ، کمانڈر ایرانی القدس فورس سمیت 5 جاں بحق

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بھی ایرانی جنرل قاسم سلیمانی پر حملے کی تصدیق کرتے ہوئے امریکی پرچم ٹوئٹ کیا ہے۔

عراقی پاپولر موبائلائزیشن فورس نے الزام عائد کیا ہے کہ امریکا اور اسرائیل ابومہدی المہندس اور قاسم سلیمانی پر حملے میں ملوث ہیں۔

ایران کے پاسداران انقلاب اور امریکی دفاعی ادارے پینٹاگون نے بھی ایرانی میجر جنرل قاسم سلیمانی کی ہلاکت کی تصدیق کر دی ہے۔

پینٹاگون کا کہنا ہے کہ میجر جنرل قاسم سلیمانی کو صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے حکم کے مطابق نشانہ بنایا گیاہے۔

جنرل سلیمانی کے قتل کا بدلہ لیا جائے گا: خامنہ ای

دوسری جانب پاکستان پیپلز پارٹی کی سینئر رہنما شیری رحمٰن نے اسی حوالے سے ایک بیان میں کہا ہے کہ امریکی حملے میں ایرانی جنرل سلیمانی کے مارے جانے کے گہرے اثرات مرتب ہوں گے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ جنرل سلیمانی مشرقِ وسطیٰ میں سب سے بڑے فوجی شخص کے طور پر ابھرے تھے، انہوں نے مشرقِ وسطیٰ کو ایران کے مفاد میں بدلنے کی کوشش کی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں